ملیں پھر آکے اسی موڑ پردُعا کرنا

ملیں پھر آکے اسی موڑ پردُعا کرنا

ملیں پھر آکے اسی موڑ پردُعا کرنا
کڑا ہے اب کے ہمارا سفر دُعا کرنا
دیارِ خواب کی گلیوں کو جو بھی نقشہ ہو
مکینِ شہر نہ بدلیں نظر دُعا کرنا
چراغِ جاں پہ اس آندھی میں خیریت گذرے
کوئی اُمید نہیں ہے مگر دُعا کرنا
نشاطِ قرب میں آئی ہے ایسی نیند مجھے
کُھلے نہ آنکھ میری عمر بھر دُعا کرنا

Advertisements

تصویر

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: