TUM HOOAY DOOR

TUM HOOAY DOOR

"is baat ka kiya gila tum hoay door
piyar jisko kiya woh hum say hoay door
din kathtay hi nahi tum bin ab tou
hum bhi dil kay hatoon hain majboor
aankhain nam dil bhi chup chup rehta hai
hum jan saktay hain kyuon hooay tum door
jo hooa so hoa per wafa rakhtay ho ab bhi tum zaroor
hum aaj bhi kartay hain apni chahat per gharoor………………….

Advertisements

تصویر

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: