Yeh mah-o-saal

Yeh mah-o-saal toa guzartay chalay jaayain gay
Hum her naeay saal ki aamad per
Yeh soacha karain gay
Ab kay baras judaai ka taweel mousam
Khatam ho jaaye ga shaayad
Laikin her guzray baras ki tarah
Mausam-e-hijraan phir humaaray darwaazay par
Dastak day ga
Aur hum hunstay aansoowon ke saath
Aik baar phir
Roati bahar ko khush-aamdaid kahain gay 

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: