محبت کے کنارے، کون جانے؟

محبت کے کنارے، کون جانے؟

محبت کے کنارے، کون جانے؟
وفا کے درد سارے، کون جانے؟

نگاہوں سے ہی دل کی بات کہہ دی
نگاہوں کے اشارے، کون جانے؟

کہیں‌ طوفان ہی میں کھو نہ جائیں
ملیں گے کب کنارے، کون جانے؟

نگاہوں میں‌ کوئی جچتا نہیں‌ ہے
کہاں‌ ہیں‌ جاں سے پیارے، کون جانے؟

دعاؤں میں‌ اثر باقی نہیں‌ ہے
کوئی کسے پکارے، کون جانے؟

Advertisements

تصویر

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: